چقندر کا جوس دل کے مریضوں کے لیے مفید ہے، تحقیق

 

چقندر کا جوس دل کے مریضوں کے لیے مفید ہے، تحقیق

روزانہ ایک گلاس چقندر کا جوس پینے سے دل کی بیماری میں مبتلا افراد میں نقصان دہ سوزش کو کم کرنے میں مدد ملتی ہے۔

دل کی بیماری دل کی بیماری کی سب سے عام قسم ہے اور دنیا بھر میں موت کی سب سے بڑی وجہ سمجھا جاتا ہے.

نائٹرک آکسائڈ اچھی صحت کے لئے اہم ہے کیونکہ یہ بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے میں کردار ادا کرتا ہے۔

اس بیماری میں مبتلا افراد کے جسم میں نائٹرک ایسڈ کی سطح کم ہوتی ہے۔

نائٹرک آکسائڈ اچھی صحت کے لئے اہم ہے کیونکہ یہ بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے میں کردار ادا کرتا ہے۔

کوئین میری یونیورسٹی کی تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ جسم کو کسی بھی چوٹ یا بیماری سے بچانے کے لیے ایڈیما اہم ہے لیکن کورونری ہارٹ ڈیزیز میں مبتلا افراد میں ایڈیما برقرار رہتا ہے جس سے شریانیں زیادہ متاثر ہوتی ہیں۔ اور ہارٹ اٹیک کا خطرہ بڑھا دیتا ہے۔

محققین کا کہنا ہے کہ تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ روزانہ ایک گلاس چقندر کا جوس پینے سے جسم میں نائٹرک آکسائیڈ پیدا ہوتا ہے جس سے سوزش کم ہوتی ہے۔

چقندر میں نائٹریٹ کی مقدار بہت زیادہ ہوتی ہے جو جسم میں نائٹرک ایسڈ میں تبدیل ہوجاتی ہے۔

اس تحقیق میں 114 صحت مند افراد کو شامل کیا گیا جن میں سے 78 کو ٹائیفائیڈ کی ویکسین دی گئی جس کی وجہ سے عارضی طور پر شریانوں میں سوجن پیدا ہوگئی جبکہ دیگر 36 افراد کو کریم سے جلد کی سوجن ہوگئی۔

اس کے بعد ان افراد کو 7 دن تک ہر صبح 140 ملی لیٹر چقندر کا رس دیا گیا ، لیکن 50 فیصد رضاکاروں کے مشروبات میں نائٹریٹ کی اعلی سطح تھی ، جبکہ نائٹریٹ کو باقی 50 فیصد سے خارج کردیا گیا تھا۔

نتائج سے پتہ چلتا ہے کہ جو لوگ نائٹریٹ سے بھرپور مشروبات پیتے ہیں ان کے خون میں نائٹرک آکسائڈ کی سطح دوسرے گروپوں کے مقابلے میں نمایاں طور پر زیادہ ہوتی ہے۔

نائٹریٹ جوس نے کورونری شریانوں کے کام کو منظم کرنے میں مدد کرنے والے خلیوں کی تعداد میں بھی اضافہ کیا.

محققین کا کہنا تھا کہ نتائج سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ جوس دل کے امراض میں مبتلا لاکھوں افراد کے لیے فائدہ مند ثابت ہوسکتا ہے۔

ماہرین اب موجودہ نتائج کی تصدیق کرنے کے لئے نائٹریٹ میں اعلی غذا پر کلینیکل ٹرائل کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں.

 


This e-mail and any attachments are confidential and intended solely for the addressee and may also be privileged or exempt from disclosure under applicable law. If you are not the addressee, or have received this e-mail in error, please notify the sender immediately, delete it from your system and do not copy, disclose or otherwise act upon any part of this e-mail or its attachments. Any opinion or other information in this e-mail or its attachments that does not relate to the business of HBL is personal to the sender and is not given or endorsed by HBL. Internet communications are not guaranteed to be secure or virus-free. HBL does not accept responsibility for any loss arising from unauthorised access to, or interference with, any Internet communications by any third party, or from the transmission of any viruses. Replies to this e-mail may be monitored by HBL for operational or business reasons.